اتوار‬‮   25   فروری‬‮   2024
پاکستان سے رشتہ کیا     لا الہ الا الله
پاکستان سے رشتہ کیا                    لا الہ الا الله

1971 میں پاکستان کو دولخت کرنے میں بھارت کا شرمناک کردار

       
مناظر: 524 | 16 Dec 2022  

 

اسلام آباد (نیوز ڈیسک )یہ ایک حقیقت ہے کہ بھارت نے 1971میں پاکستان کو دولخت کرنے میں ایک انتہائی مذموم کردار ادا کیاہے کیونکہ مکتی باہنی کو مسلح کرنے، تربیت دینے اور اکسانے میںبھارت کا کردار بنگلہ دیش کے قیام کا سب سے بڑا سبب تھا۔
بھارت کے موجودہ فسطائی وزیر اعظم نریندر مودی سمیت کئی بھارتی رہنماؤں نے 1971 میں پاکستان کو توڑنے میں بھارتی کردار کا کھلے عام اعتراف کیا ہے۔رپورٹ میں کہا گیا کہ بھارت 1971سے متعلق اپنی من گھڑت داستانوںکے ذریعے بنگلہ دیشی عوام کے ذہنوں اور دلوں میں پاکستان کےلئے نفرت کودوبارہ بڑھکارہا ہے ۔ رپورٹ میں کہا گیا کہ بنگلہ دیش کے اندرونی معاملات میں بھارتی مداخلت 1971 میں اس کے قیام کے وقت سے ہی شروع ہوگئی تھی۔
رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ تحریک پاکستان میں بنگالی رہنماؤں کی خدمات اہم اور غیر معمولی تھیں جنہوں نے خطے کی تاریخ کا ایک عظیم باب تشکیل دیا۔ آل انڈیا مسلم لیگ 1906میں ڈھاکہ میں قائم کی گئی تھی۔
رپورٹ میں کہا گیا کہ بنگلہ دیش نے اپنے مسلم کردار کو برقرار رکھا ہے جس سے ثابت ہوتا ہے کہ دو قومی نظریہ خلیج بنگال میں غرق نہیں ہوا جیسا کہ اندرا گاندھی نے 1971 میں دعویٰ کیا تھا۔
کے ایم ایس رپورٹ میں افسوس کا اظہار کیا گیا کہ مودی کی زیر قیادت فسطائی حکومت کے تحت بھارت نے بنگلہ دیش سمیت اپنے پڑوسی ممالک کے اندرونی معاملات میں مداخلت تیز کر دی ہے۔ رپورٹ میں میں مزید کہا گیا کہ بنگلہ دیش اور پاکستان کو اپنے تعلقات کے ایک نئے باب کا آغاز کرنا چاہیے تاکہ بھارت کے تسلط پسندانہ عزائم کو شکست دی جا سکے۔رپورٹ میں میں کہا گیا ہے کہ بنگلہ دیش کو اسلام آباد اور ڈھاکہ کے درمیان دراڑ پیدا کرنے کے حوالے سے بھارتی کردار کو سمجھنے کی ضرورت ہے ۔
رپورٹ میں کہا گیا کہ بھارت نے پاکستان کے قیام کے اب تک قبول نہیں کیا ہے اور وہ پاکستان میں مسائل کو ہوا دینے میں مسلسل مصروف ہے۔