جمعرات‬‮   29   فروری‬‮   2024
پاکستان سے رشتہ کیا     لا الہ الا الله
پاکستان سے رشتہ کیا                    لا الہ الا الله

کسی دہشت گرد تنظیم کے ساتھ رعایت نہیں برتی جائے گی: آرمی چیف

       
مناظر: 845 | 1 Feb 2023  
اسلام آباد (نیوز ڈیسک ) پاکستان کے آرمی چیف جنرل عاصم منیر نے آرمی کمانڈرز پر زور دیا ہے کہ وہ انٹیلیجنس ایجنسیز اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے ساتھ مل کر انسداد دہشت گردی آپریشن پر نئے جذبے کے ساتھ توجہ مرکوز کریں تاکہ پائیدار امن حاصل کیا جاسکے۔
فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کی جانب سے جاری بیان کے مطابق آرمی چیف کی زیر صدارت کور کمانڈرز کانفرنس منگل کو جی ایج کیو میں منعقد ہوئی جس کے دوران شرکا کو موجودہ اور سامنے آنے والے خطرات، ’مقبوضہ‘ کشمیر کے حالات اور آرمی اور قانون نافذ کرنے والے ادوروں کی جانب سے دہشت گردوں کے خلاف ’انٹیلیجنس بیسڈ‘ آپریشنز پر بریفنگ دی گئی۔
کانفرنس کے شرکا نے پشاور پولیس لائنز دھماکے میں ’شہید‘ ہونے والوں کو خراج تحسین پیش کیا اور اس عزم کا اظہار کیا کہ اس حملے میں ملوث کرداروں کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا۔
اعلامیے کے مطابق آرمی چیف نے کہا کہ ایسے بزدلانہ حملے قوم کے عزم کو متزلزل نہیں کرسکتے بلکہ ان سے دہشت گردی کے خلاف جاری جنگ میں کامیابی کے لیے ہمارے عزم کو مہمیز ملے گا اور کسی بھی دہشت گرد تنظیم کے لیے ’زیرو ٹالرنس‘ کی پالیسی رہے گی۔
بیان میں کہا گیا ہے کہ ’کور کمانڈر کانفرنس نے انڈین مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزی اور کشمیر میں آبادی کے تناسب کو تبدیل کرنے کے انڈیا کے مذموم مقصد کا نوٹس لیتے ہوئے آرمی کی پاکستان کی جانب سے کشمیر کے حق خودارادی کی حمایت کے فیصلے کی حمایت کا اعادہ کیا۔